URDU Blog : ‫مجھے تو ڈر سا لگتا ہے

By Noor e Ahmed, Class of 2019 

‫مجھے تو ڈر سا لگتا ہے  

کبھی خوشیوں کے آنے سے 
ہمیشہ مسکرانے سے
کہ مرگِ شادمانی میں
ذرا سی دیر لگتی ہے 
مجھے تو ڈر سا لگتا ہے 



کبھی سب کچھ بتانے سے 
کبھی سب کچھ چھپانے سے 
کہ بےجا ترجمانی میں
ذرا سی دیر لگتی ہے 

مجھے تو ڈر سا لگتا ہے 



کسی کے پاس جانے سے 
اسے اپنا بنانے سے 
کہ دل کی بدگمانی میں
ذرا سی دیر لگتی ہے 

مجھے تو ڈر سا لگتا ہے 



کسی خواہش کے ہونے سے
کسی حسرت کو پانے سے
کہ ترکِ بندگانی میں
ذرا سی دیر لگتی ہے 

مجھے تو ڈر سا لگتا ہے



محبت آزمانے سے
کسی کے دور جانے سے
کہ ختمِ زندگانی میں
ذرا سی دیر لگتی ہے 

مجھے تو ڈر سا لگتا ہے 



کبھی خود کو ہی پانے سے
کبھی سب بھول جانے سے
کہ یونہی بےدھیانی میں
ذرا سی دیر لگتی ہے

مجھے تو ڈر سا لگتا ہے۔۔

                              

 ‬‎نورِ احمد ۔

Comments

Popular posts from this blog

Final Year Surgery Exam: Important topics

FSc Premedical Guide - How to fly high..

USMLE Step 1 Experience by Ayaz Mehmood (Score : 99/266)